Parveen Shakir Poetry

Badan Ke Karb Ko Woh Bhi Samajh Na Payega

Badan Ke Karb Ko Woh Bhi Samajh Na Payega,
Main Dil Se Ro’ungi Aankhon Se Muskuraungi
بدن کے کرب کو وہ بھی سمجھ نہ پائے گا
میں دل سے روؤں گی آنکھوں سے مسکراؤں گی
Please Share: Urdu Poetry.

Tu Badalta Hai Toh Be Sakhta Meri Aankhen

Tu Badalta Hai Toh Be Sakhta Meri Aankhen,
Apne Hathon Ki Lakeeron Se Ulajh Jaati Hain
تو بدلتا ہے تو بے ساختہ میری آنکھیں
اپنے ہاتھوں کی لکیروں سے اُلجھ جاتی ہیں
Please Share: Urdu Poetry.